کمشنر سکھر کا سیلابی صورتحال سے نمٹنے کیلیے عملے کو ہائی الرٹ رہنے کا حکم

سکھر (ہم صفیر نیوز)کمشنر سکھر ڈویژن شفیق احمد مہیسر نے مون سون کی برساتوں کی پیشنگوئی کے بعد ممکنہ برساتی اور سیلابی صورتحال سے نمٹنے کے لیے متعلقہ محکموں کے افسران اور عملے کو ہائی الرٹ رہنے کا حکم دے دیا۔ میونسپل کارپوریشن سکھر کو ہدایت دی کہ پانی کی نکاسی کے لیے نالوں کی صفائی اور ڈی سلٹنگ روزانہ کی بنیاد پر کی جائے اور رپورٹ فراہم کی جائے۔ اسسٹنٹ کمشنرز صفائی کی نگرانی کریں گے۔ ان ہدایات کا اظہار انہوں نے ڈی سی آفس سکھر میں ہنگامی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس کے دوران ڈپٹی کمشنر غلام مرتضیٰ شیخ نے برساتی نالوں کی صفائی، مشنری اور دیگر امور پر تفصیل سے بریفنگ دی انہوں نے بتایا کہ ممکنہ برسات اور سیلابی صورتحال سے نبرد آزما ہونے کے لیے ڈی سی آفس، اے سی آفسز میں کنٹرول روم قائم کیے گئے ہیں جبکہ سول ڈیفنس کے رضاکارو ں کو ترتیب بھی دی گئی ہے۔ اجلا س میں کمشنر سکھر ڈویژن نے پی ڈی ایم اے، میونسپل، پبلک ہیلتھ، آبپاشی محکموں کے افسران کو ہدایت دی کہ مشنری، ڈمپر، لوڈر،ڈی واٹرنگ پمپ سمیت افرادی قوت کو ہمہ وقت تیار رکھیں۔انہوں نے قریشی گوٹھ کے مکینوں کو گندے پانی کی نکاس کے لیے متبادل نظام کی فراہمی کی ہدایت کی۔ کمشنر سکھر نے 6 یونین کونسلوں میں سالڈ ویسٹ کا کام آؤٹ سورس کرنے پر عدم اطمینان کا اظہار کیا۔انہوں نے غلام محمد مہر میڈیکل کالج میں صفائی ستھرائی روزانہ کی بنیاد پر کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔کمشنر سکھر نے مزید کہا کہ سندھ حکومت سول ڈیفنس کو فعال بنانے میں عملی اقدامات کررہی ہے کمشنر سکھر شفیق احمد مہیسر نے کہا کہ مون سون کے دوران تمام اسپتالوں میں میں ایمرجنسی ہوگی اور ڈاکٹروں سمیت پیرا میڈیکل اسٹاف، ادویات، ایمبولینس اور دیگر متعلقہ اسٹاف کی موجودگی کو یقینی بنایا جائے۔ بعد ازاں انہوں نے 14 اگست یوم آزادی کے پروگراموں کو بھرپور قومی جوش و جذبے سے منانے اور 15 اگست کو یوم سیاہ منانے کا اعلان کرتے ہوئے کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی ریلی نکالنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

Facebook Comments