جیل اصلا حا ت ڈیڑھ صدی پرانے قانون کو تبدیل کرنے کا پہلا قدم ہے،مرتضی وہاب

کراچی (ہم صفیر نیوز ) وزیر اعلی سندھ کے مشیر اطلاعات قا نو ن و اینٹی کرپشن سندھ بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ جیل اصلا حا ت ڈیڑھ صدی پرانے قانون کو تبدیل کرنے کا پہلا قدم ہے جیل کا مقصد اصلاح گھر ہے ، عقوبت خانہ نہیں ہے جیل اصلاحات کا قانون بہتری کی طرف مثبت قدم ہے نئے قوانین کی تیا ر ی کےلئے اپوزیشن نے بھر پو رمعاونت کی ہے اور فردوس شمیم نقوی اور جاوید حنیف خان نے بھرپور ساتھ دیا ۔ ان خیا لا ت اظہا ر انہو ں نے میڈیا سے با ت چیت کر تے ہو ئے کیا ۔ انہو ں نے مزید کہا کہ صو بہ سندھ پہلا صو بہ ہو گا جہا ں جیل کو اصلا ح گھر بنا نے کےلئے قا نو ن سازی کی گئی ہے اس ایکٹ میں قیدیوں کی عزت نفس اور معاشرتی پہلوو ں کو مد نظر رکھا گیا ہے اور انہیں امتیازی حیثیت دی گئی ہے تا کہ جیل سے ;200;زا د ہو کر قیدی با عزت شہر ی بن سکیں اور معا شر ے میں اپنا مثبت کر دار ادا کر سکیں ۔ بیرسٹر مر تضی وہا ب نے کہا کہ یہ بل بھی سندھ اسمبلی میں پیش ہو نے جا رہا ہے ا س بل سے قیدیو ں کی اصلا ح کےلئے سندھ اسمبلی کو قا نو ن ساز اسمبلی کہنے کا اعزا ز بھی حا صل ہو گا انہو ں نے بتا یا کہ سندھ پرزنز اینڈ کریکشن سروس ایکٹ 2019 کو اصلاحی بل سے موسوم کیا جاسکتا ہے ۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.