لاہور ہائیکورٹ کا پنجاب حکومت کو چینی کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کا حکم

لاہور(ہم صفیر نیوز)لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب حکومت کو چینی کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کا حکم دیتے ہوئے ریمارکس دئیے ہیں کہ حکومت رمضان بازار بنانے سے بہتر ہے کہ انتظامات کو بہتر کر لے۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مامون الرشید نے جوڈیشل ایکٹوزم پینل کی درخواست پر سماعت کی۔درخواست میں رمضان بازاروں میں اشیائے خورونوش مہنگے داموں فروخت کرنے کے اقدام کو چیلنج کیا گیا ہے۔دوران سماعت عدالت نے استفسار کیا کہ مرغی کے نرخ محکمہ لائیو سٹاک کی بجائے پولٹری ایسوسی ایشن کیوں طے کرتی ہے؟۔لاہور ہائیکورٹ نے سیکرٹری لائیو اسٹاک کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔جسٹس مامون الرشید نے ریمارکس دئیے کہ رمضان میں ہی کیوں چینی کی قیمت میں اضافہ کیا جاتا ہے، بتایا جائے کیا اشیا ء کی کوالٹی میں کوئی فرق ہے۔رمضان بازاروں میں مارکیٹ کمیٹی کے طے شدہ ریٹ کے مطابق اشیا فروخت ہونی چاہئیں۔مارکیٹ کمیٹی کو کس قانون کے مطابق اختیارات دئیے ہیں۔ عدالت نے باور کرایا کہ حکومت پورا سال قیمتوں کو کنٹرول کرنے کے لیے اقدامات کیوں نہیں کیے جاتے،حکومت رمضان بازار بنانے سے بہتر ہے کہ انتظامات کو بہتر کریں۔لاہور ہائیکورٹ نے آئندہ سماعت پر سیکرٹری لائیو سٹاک کو طلب کر لیا اور عدالت نے چینی کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کا حکم دیتے ہوئے آئندہ سماعت رپورٹ بھی طلب کر لی۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.