ترکی کے سب سے بڑے ادارے آرشلک کے چیف ٹیکنالوجی آفیسرکا دورہ پاکستان

کراچی (ہم صفیر نیوز) ترکی کے سب سے بڑے ادارے، آرشلک کے چیف ٹیکنالوجی آفیسر، اوگوژان اوزترک نے 14سے 16مئی، 2019ء تک پاکستان کا دورہ کیا۔ اپنے تین روزہ دورے کے دوران،انہوں نے کارپوریٹ لیڈرز اور،پاکستان میں گھریلو اپلائنسز کے انڈسٹری لیڈر،ڈاؤلینس کی آپریشنل ٹیموں سے ملاقاتیں کیں۔آرشلک یورپ میں تیسرا بڑا مینوفیکچرر ہے جبکہ ڈاؤلینس،پاکستان میں،اس کا کل ملکیتی ذیلی ادارہ ہے جو صارفین کے لیے انتہائی قابل اعتماد الیکٹرونکس،اپلائنسز اور دیگر مصنوعات تیار کرتا ہے۔پاکستان میں، اوزترک نے گھریلواپلائنسز کی مارکیٹ سمیت کراچی اورحیدرآباد میں ڈاؤلینس کی مینوفیکچرنگ کی سہولتوں کا دورہ بھی کیا۔ان کے اس دورے کا بنیادی مقصد ڈاؤلینس کی پیش رفت کے بارے میں تازہ ترین معلومات حاصل کرنا تھاجس کے لیے جدید مصنوعات کی تیاری اور پاکستان میں اس کی مینوفیکچرنگ کی سہولتوں پر مسلسل سرمایہ کاری کی جا رہی ہے۔اس دورے کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے جناب اوزترک نے کہا:”سنہ 2016 ء میں ڈاؤلینس کے حصول کے بعد سے، آرشلک نے پاکستانی ذیلی ادارے میں 36 ملین یورو سے زیادہ کی سرمایہ کاری کی ہے تاکہ نئی مصنوعات پر تحقیق اور ترقی کے ذریعے پیداوار بہتر بنائی جا سکے اور وہ مصنوعات مارکیٹ کی ضرورتوں کے مطابق ہوں۔ مصنوعات کی ڈیزائننگ اور ڈیزائن کی سہولتوں پر بھی مزید سرمایہ کاری کی جا رہی ہے جبکہ ڈاؤلینس کی وسیع رینج میں اضافے کے لیے نئے آلات اور مشینری بھی لگائی جا رہی ہے۔اس کے علاوہ، موجودہ کیلنڈر سال 2019 ء کے دوران مزید 16 ملین یورو کی سرمایہ کاری متوقع ہے۔ڈاؤلینس کی ٹیموں کے ساتھ اپنی ملاقات کے دوران جناب اوزترک نے ایسی مصنوعات ڈیزائن کرنے پر زور دیا جو پاکستانی صارفین کی توقعات پر پورا اترتی ہوں یا اس سے بھی بڑھ کر ہوں۔ اسی کے ساتھ، کمپنی کو لازماً معیار اور تحفظ کے عالمی تقاضوں کی تعمیل پر بھی پورا اترنا چاہیے۔ عمدہ کاکردگی پر انہوں نے ڈاؤلینس کی ٹیموں کی تعریف کی اور انہیں آرشلک گلوبل کی جانب سے ہر ممکن اعانت کا یقین دلایا۔جناب اوزترک نے ڈاؤلینس میں جدید ٹیکنالوجیز کے استعمال کے حوالے سے اپنے ویژن سے ٹیموں کو بہت متاثر کیا۔ نہایت کوالیفائیڈ ٹیکنالوجی ایکسپرٹ کی حیثیت سے انہوں نے پلانٹ اور مشینری کی عمدہ کاکردگی کے لیے کئی گائیڈ لائنز فراہم کیں تاکہ کم سے کم توانائی استعمال کر کے زیادہ سے زیادہ پیداوار حاصل کی جا سکے۔پاکستان میں توانائی کے بڑھتے ہوئے اخراجات کے پیش نظر، ڈاؤلینس توانائی میں بچت فراہم کرنے والی ٹیکنالوجیز اور ایسے پائیدار آلات کی تیاری میں ہمیشہ پیش پیش رہا ہے جو پاکستان کے گرم موسم اور دیگر ماحولی خطرات میں بھی کام کر سکیں۔جناب اوزترک نے ملک بھر میں ڈاؤلینس کے بعد از فروخت سروس کے نیٹ ورک میں تیزی سے ہونے والی توسیع کو بھی سراہا کیوں کہ کمپنی سمجھتی ہے کہ 24/7 کسٹمر کیئر کی فراہمی صارفین کا اعتماد حاصل کرنے کے لیے کلیدی حیثیت رکھتی ہے۔انہوں نے پاکستان میں ڈاؤلینس کے پلانٹ اور ترکی، روس، رومانیہ، تھائی لینڈ اور جنوبی افریقہ میں آرشلک کے عالمی پلانٹس کے درمیان تیکنکی تعاون پر بھی زور دیا۔ انہوں نے ڈاؤلینس کی ٹیم کویقین دلایا کے آنے والے دنوں میں آرشلک کی جانب سے، ڈاؤلینس کی انجنیئرنگ ٹیم کے لیے تیکنکی معلومات اور مہارت کی منتقلی میں تیزی آئے گی۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.