جس شہر میں امن نہیں ہوگا وہ کبھی ترقی نہیں کر سکتا ، فردوس شمیم نقوی

کراچی(ہم صفیر نیوز)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فردوس شمیم نقوی نے کہا ہے کہ کراچی میں پینے کا پانی نہیں، ہسپتالوں میں سہولیات میسر نہیں،دیگر تمام سہولیات کا ہی فقدان ہے، جس شہر میں امن نہیں ہوگا وہ کبھی ترقی نہیں کر سکتا،شہر میں اسٹریٹ کرائم بہت زیادہ یں۔ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ جس شہر میں امن نہیں ہو گا وہ شہر کبھی ترقی نہیں کر سکتا اور کراچی میں ابھی تک امن نہیں ہے، اسٹریٹ کرائم بہت زیادہ ہیں،کراچی کا آخری ماسٹر پلان 1984 کا ہے اس کے بعد کوئی منصوبہ بندی نہیں کی گئی، آبادی تیزی سے بڑھتی جا رہی ہے۔فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ کراچی کو ایک ہزار ملین گیلن پانی روزانہ چاہیے تاہم کراچی کو 450 ملین گیلن پانی مل رہا ہے، اس شہر کو 25 ہزار سے زیادہ مسافر بسوں کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتوں نے کراچی کے سرکاری اداروں میں کارکنان کی بھرتیاں کیں لیکن وہ شہر کی خدمت کرنے کے بجائے پارٹی کا کام کرتے ہیں،جو اداروں کی کارکردگی پر بْرا اثر ڈال رہی ہے۔رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ پیسوں کے بغیر شہر میں کوئی کام نہیں ہو سکتا، کراچی کے لوگ بھی رقم دینے کو تیار ہیں تاہم اگر وصول کی گئی رقم کام پر خرچ نہیں ہوگی تو لوگوں کا بھی اعتماد خراب ہوتا ہے،جس مد میں رقم آئے اسے وہیں خرچ ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ جو شعبہ جس کے دائرہ اختیار میں ا?تا ہے اسے ہی حل کرنے دیا جائیگا تو وہ درست ہو گا لیکن اگر تمام معاملات مرکزی سطح سے حل ہوں گے تو مسائل تو پیدا ہوں گے۔فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ بشریٰ زیدی کے واقعے کے بعد شہر کے حالات مکمل طور پر تبدیل ہو گئے، کراچی اپوزیشن شہر جب سے بنا اس کے بعد سے وفاق نے توجہ دینا کم کر دی اور کراچی تباہ ہونا شروع ہو گیا۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.