مقبوضہ کشمیر کی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے،رحمن ملک

اسلام آباد (ہم صفیر نیوز)چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے کہاہے کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے، دنیا نریندر مودی کا یزیدی چہرہ دیکھانا ہوگا،دنیا مودی کو ایوارڈ دے رہی ہے اور ہم خاموش بیٹھے ہیں، دنیا کو ایک ماہ سے کشمیر میں نافذ کرفیو کا پتہ نہیں یہ ہماری خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے،مودی کشمیر کو ہڑپ نہیں کرسکتا، کشمیری آزادی لے کر رہینگے،مودی جنگی مجرم ہے حکومت پاکستان انٹرنیشنل کرمنل کورٹ میں جائے،مودی ہوش سے کام لے،اگر جہادی تنظیموں نے کشمیر میں جہاد کا اعلان کردیا تو مشکلات ہونگی، معاملے پر پارلیمنٹ کا ان کیمرہ اجلاس بلایا جائے۔اتوار کو یہاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہاکہ ہم نواسہ رسول ؐ حضرت امام حسین ؓ اور شہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ شہدائے کربلا کی قربانی حق و باطل کی لڑائی میں حق کی فتح کی یاد دلاتی ہے، کربلا میں امام حسین ؓنے جانوں کا نذرانہ تو پیش کیا مگر یزید کے سامنے جھکا نہیں۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ آج کا کربلا کشمیر ہے جہاں بھارتی افواج نہتے مسلمانوں پر ظلم و جبر کی انتہا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم ہمیشہ حق کی سربلندی کیلئے سرگرم عمل رہیں گے اور مظلوم کشمیریوں کا ساتھ دیتے رہینگے۔انہوں نے کہاکہ اسوہ حسین ابن علی ؓپر عمل کرتے ہوئے یزیدیت کے خلاف نبرد آزما رہیں گے۔سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ آج کا یزید نریندر مودی ہے جس نے کشمیر کو کربلا بنایا ہے۔ انہوں نے کہاکہ مودی نے معصوم کشمیریوں کو گھروں میں محصور کرکے پانی، ادویات و اشیائے خوردونوش بند کئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ دنیا کو نریندر مودی کا یزیدی چہرہ دیکھانا ہوگا، کشمیریوں کو مودی کے مظالم سے جلد آزادی ملے گی۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان دنیا کے ہر ملک کے سربراہان و صدور کو خط لکھے، دنیا وزیراعظم مودی کو ایوارڈز دے رہی ہے اور ہم خاموش بیٹھے ہیں،میں ان بلاروس میں کانفرنس شرکت کرنے گیا تھا افسوس ہوا کہ بہت کو کشمیر کے مسئلے کا پتہ نہیں تھا۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ ہماری خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے کہ ایک ماہ کے کشمیر میں کرفیو کا پتہ دنیا کو نہیں۔ انہوں نے کہاکہ میں نے جس ملک کے نمائندے سے بات کی انکو کشمیر میں کرفیو کا معلوم نہیں تھا۔ انہوں نے کہاکہ مودی کشمیر کو ہڑپ نہیں کرسکتا، کشمیری آزادی لے کر رہینگے۔ انہوں نے کہاکہ میڈیا کو مکمل طور پر کشمیر میں بھارتی حکومت نے دبایا ہوا ہے، مودی جنگی مجرم ہے حکومت پاکستان انٹرنیشنل کرمنل کورٹ میں جائے۔ انہوں نے کہاکہ مودی ہوش سے کام لے اگر جہادی تنظیموں نے کشمیر میں جہاد کا اعلان کردیا تو مشکلات ہونگی۔ انہوں نے کہاکہ اگر جہادی کشمیر کی طرف چل پڑے تو نہ صرف حطہ بلکہ پوری دنیا کو مشکلات درپیش ہونگی۔ انہوں نے کہاکہ میڈیا سے اپیل کرتا ہوں کہ روزانہ کچھ وقت کشمیر کیلئے مختص کرے۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر پر فوری طور پر پارلیمنٹ کا ان کیمرہ اجلاس بلائے۔ انہوں نے کہاکہ مودی کو چاند کی بجائے کشمیر کیطرف دیکھے، چاند پر جانے میں تو مودی ناکام ہوا۔ انہوں نے کہاکہ اقوام متحدہ کی خاموشی مجرمانہ ہے جو کرفیو پر خاموش ہے۔ انہوں نے کہاکہ آرمی چیف کا کشمیر پر بیان قومی کی ترجمانی ہے۔ انہوں نے کہاکہ خدشہ ہے مودی اب کوئی پلوامہ جیسا کوئی ڈرامہ دوبارہ نہ کرے۔۔ انہوں نے کہاکہ مجھے اطلاع ہے کہ مودی را کے ذریعے پاکستان میں امن و امان برباد کرنے کی پلان کر رہا ہے۔ رحمن ملک نے کہاکہ بھارت نے پہلے سوشل میڈیا پر کنٹرول کیا،پھر کشمیر میں تین سو ستر اے ختم کیا،حکومت اقوام متحدہ کی قرار داد کے حوالے سے خط لکھے،حق خودارادیت کیلئے یو این سے وقت مانگا جائے۔ انہوں نے واضح کیا کہ مودی ایک دن کشمیر کے معاملے پر میز پر بیٹھنا تمھاری مجبوری ہو گی۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.