• April 1, 2020

پاکستان میں 5۔جی کی سہولیات کی فراہمی کیلئے دو سے تین سال کا وقت درکار ہے

اسلام آباد (ہم صفیر نیوز)پاکستان میں رواں سال5۔ جی کا آزمائشی بنیادوں پر آغاز ہو گا، 5۔جی کی مکمل سہولیات کی فراہمی کے لئے دو سے تین سال کاوقت درکار ہے، ٹیکنالوجی کی اپ گریڈیشن کے لئے بھاری سرمایہ کاری کی ضرورت ہے، پاکستان میں ٹیلی کام سیکٹر کا مستقبل بہت روشن ہے، ٹیلی کام کے شعبہ کو تیزی سے بدلتے ہوئے عالمی منظر نامے اور ضروریات کے مطابق حکمت عملی مرتب کرنی چاہیے۔ژونگ کے ڈپٹی چیف ایگزیکٹو آفیسر نیاز ملک نے اپنے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ ٹیلی کام سیکڑ کا مستقبل روشن ہے تاہم شعبہ کو چاہیے کہ وہ بدلتے ہوئے رجحانات کے مطابق اپنی ترجیحات کا تعین کرے۔ انہوں نے کہا کہ روا ں سال 2020 میں پاکستان میں 5۔جی کا آزمائشی بنیادوں پر آغاز ہو گا تاہم5۔جی کی مکمل سہولیات کی فراہمی کے لئے دو سے تین سال کاوقت درکار ہے کیونکہ ٹیکنالوجی کی اپ گریڈیشن کے لئے بھاری سرمایہ کاری کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ دنیا کے دیگر ممالک کے مقابلہ میں پاکستان کالز اور ڈیٹا پیکجز انتہائی سستے ہیں جس کی وجہ سے ٹیلی کام کی کمپنیوں کو بھاری سرمایہ کاری کے مسائل کاسامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹیلی کام کمپنیاں اگر اپنے وسائل سے 5۔جی کی فراہمی کے لئے ٹیکنالوجی کو اپ گریڈ کریں گی تو اس کے لئے دوسے تین سال کا وقت درکار ہو گا۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں بہترین افرادی قوت موجود ہے جس کو مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق تعلیم و تربیت فراہم کرے۔ ٹیکنالوجی کے شعبہ میں نمایاں مقام حاصل کیا جا سکتا ہے۔

Read Previous

ترکی ہمارے اندرونی معاملات میں مداخلت سے پرہیز کرے،بھارت

Read Next

(پی ایس ایل)2020 کے دوران اردو میں کمنٹری نشر ہوگی

%d bloggers like this: