• May 25, 2020

احتسا ب عدالت میں منی لانڈرنگ کیس کی سماعت

اسلام آباد(ہم صفیر نیوز)منی لانڈرنگ سے سندھ بنک کو 25 ارب روپے نقصان پہنچانے کے ریفرنس پر سماعت احتساب کورٹ روم نمبر دو کے جج محمد اعظم خان نے کی سابق صدر سندھ بنک بلال شیخ، عبد الغنی مجید، طارق اسلم سمیت دیگر ملزمان عدالت میں پیش ہوئے عدالت نے یونس قدوائی، سلیم فیصل سمیت دیگر پیش نہ ہونے والے ملزمان کی دوبارہ طلبی کے نوٹس جاری کرتے ہوئے ہدایت کی کہ تمام غیر حاضر ملزمان کو 4 مارچ کو حاضری یقینی بنائی جائے ملزما ن پر سندھ بنک سے حسین لوائی کی بے نامی کمپنیوں کو 29 ارب قرض دینے کا الزام ہے نیب ریفرنس میں عدالت کو بتایا گیا ہے کہ ملزمان نے 29 ارب میں سے 4 ارب واپس کئے گئے،25 ارب سندھ بنک کے ملزمان غبن کر گئے۔ بلال شیخ، طارق احسن نے حسین لوائی کے ساتھ قرض کے نام پر منی لانڈرنگ کا منصوبہ بنایاملزمان کا مقصد سندھ بنک کا پیسہ حسین لوائی کے نجی بنک میں منتقل کرنا تھا ریفرنس میں مزید بتایا گیا کہ حسین لوائی کی تین بے نامی کمپنیوں کے ذریعے منی لانڈرنگ کی گئی کیس کی سماعت 4 مارچ تک ملتوی کر دی گئی۔

Read Previous

مہوش حیات، اقرا عزیز اور یاسر حسین کی تعریف کئے بنا نہ رہ سکیں

Read Next

اپنی کارکردگی سے ملتان سلطانز کو کامیابیاں دلوانے کی کوشش کرونگا: شاہد آفریدی

%d bloggers like this: