• May 27, 2020

ایل این جی ریفرنس، شاہد خاقان عباسی کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

اسلام آباد (ہم صفیر نیوز)احتساب عدالت اسلام آباد نے ایل این جی ریفرنس میں شاہد خاقان عباسی کے جوڈیشل ریمانڈ میں 21 فروری تک توسیع کر دی کیس کی سماعت احتساب عدالت کورٹ روم نمبر دو کے جج اعظم خان نے کی شاہد خاقان عباسی کو سخت سیکیورٹی میں اڈیالہ جیل سے احتساب عدالت میں پیش کیا گیا دوران سماعت احتساب جج نے ریمارکس دیئے کہ کچھ ملزمان کی جانب سے حاضری یقینی بنانے کے لیے ضمانتی مچلکے ابھی تک جمع نہیں کرائے گئے عدالت نے ملزمان کو حاضری یقینی بنانے کے لیے ایک کروڑ روپے کے ضمانتی مچلکے داخل کرانے کا حکم دیا تھا ملزمہ عظمی عادل نے احتساب عدالت میں ضمانتی مچلکوں کی مالیت میں کمی کی درخواست جمع کرا دی عظمی عادل کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ عظمی عادل کا نام ای سی ایل پر ہے اور وہ سول سرونٹ ہیں، بیرون ملک فرار کا خدشہ نہیں ایک غیر حاضر ملزم شاہد اسلام کے وارنٹ گرفتاری پر تعمیلی رپورٹ احتساب عدالت میں پیش کی گئی نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ تفتیشی افسر نے ملزم شاہد اسلام کی ٹریول ہسٹری عدالت میں جمع کرا دی ہیابھی اس بات کا تعین کیا جا رہا ہے کہ ملزم کس ملک میں ہے دیگر ملزمان کے وکلا اپنے ملزم کی حد تک کیس کا دفاع کریں تو بہتر ہے اس موقع پر شاہد خاقان عباسی کے وکیل بیرسٹر ظفراللہ نے عدالت کو بتایا کہ تمام ملزمان اس وقت جوائنٹ ٹریپ میں ہیں اس لیے غیر حاضر ملزم کا پتہ ہونا چاہئے جس کے جواب میں نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم شاہد اسلام کے بیرون ملک جانے کا ریکارڈ موجود ہے احتساب جج اعظم خان نے ریمارکس دیئے کہ ملزم کے سمن جاری کیے، وہ پیش نہیں ہوا تو سمن کے ساتھ قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے اس موقع پر بیرسٹر ظفراللہ نے عدالت کو بتایا کہ اگر ملزم بیرون ملک ہے تو سمن جاری کرنے کا کوئی فائدہ نہیں نیب پراسیکیوٹر نے عظمی عادل کے ضمانتی مچلکوں پر عدالت کو بتایا کہ تمام ملزمان کیلیے ضمانتی مچلکے داخل کرانے کا ایک ہی فارمولا ہونا چاہئے جس پر عظمیٰ عادل کے وکیل نے عدالت کو بتایا کی ہر ملزم کا کیس میں الگ کردار ہوتا ہے اس میں مساوات کا کام نہیں چلتایہ سول سرونٹ ہیں اور اتنی رقم جمع نہیں کرا سکتیں عظمی عادل ایک شہید کی بیوہ ہیں ہائی کورٹ انہی ایشوز پر 10 لاکھ کے مچلکوں پر ضمانت بعد از گرفتاری منظور کرتی ہے نیب پراسیکوٹر نے عدالت کو بتایا کہ شاہد خاقان عباسی نے ہائی کورٹ میں ضمانت کی درخواست جمع کرا رکھی ہے درخواست میں کہا گیا کہ شاہد خاقان عباسی کو ابھی تک ریفرنس کی نقول نہیں ملیں ہم ریفرنس اور ملزمان کے لیے ریفرنس کی نقول جمع کرا چکے ہیں اگر شاہد خاقان عباسی چاہیں تو عدالت سے اجازت لے کر ریفرنس کی نقل حاصل کر سکتے ہیں عدالت نے سماعت 21 فروری تک ملتوی کر دی

Read Previous

محکمہ ٹرانسپورٹ سندھ نے 200 بسز خریدنے کا منصوبہ بنالیا

Read Next

کوئی تبدیلی نہیں آئیگی، چوروں کی حکومت ہے: شاہد خاقان

%d bloggers like this: