• July 13, 2020

روہڑی کا ناز گراؤنڈ گندے پانی کے چوہڑوں میں تبدیلی

سکھر(ہم صفیر نیوز)سکھر کے علاقے نیویارڈ روہڑی کا ناز گراؤنڈ گندے پانی کے چوہڑوں میں تبدیلی، بلدیاتی نمائندے عوامی مسائل حل کرنے کے بجائے وزراء کی خوشامد میں مصروف، نوجوان نسل تیزی سے بے رواہ روی کا شکار ہونے لگے، تفصیلات کے مطابق نوجوانوں کو صحت مند سرگرمیوں میں مشغول رکھنے کیلئے قائم ناز گراؤنڈ نیویارڈ روہڑی بلدیاتی نمائندوں کی عدم توجہ کے باعث گند کچرے اور غلاظت کے ساتھ ساتھ گندے پانی کے جوہڑوں میں تبدیل ہو چکا ہے گندے پانی کے گراؤنڈ میں مسلسل کھڑے رہنے سے نوجوان نسل کھیل کود کی سرگرمیوں سے محروم ہوکر تیزی بے راہ روی کا شکار ہوکر جوئے، ویڈیو گیم، سگریٹ نوشی، اسنوکر جیسی غلط سرگرمیوں میں ملوث ہو رہے ہیں، جبکہ گراؤنڈ میں مسلسل گندے پانی کے کھڑے ہونے سے مچھروں کی بہتات کے باعث ملیریا سمیت دیگر امراض بھی پھیلنے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے، اس سلسلے میں نیویارڈ روہڑی کے مکینوں کا کہنا تھا کہ ماضی میں اس گراؤنڈ میں ہارڈ بال، ٹیپ بال کرکٹ ٹورنامنٹ سمیت فٹبال میچ کے مقابلے بھی منعقد ہوتے تھے اسی گراؤنڈ سے کھیل کود کی سرگرمیوں میں حصہ لیکر نوجوان نسل صوبائی و ملکی سطح کے کھلاڑی بھی نکھر کر سامنے آئے ہیں۔ لیکن اب بلدیاتی نمائندوں اور انتظامیہ کی عدم توجہی کے باعث کھیل کود کا میدان گندے پانی کے جوہڑوں میں تبدیل ہوچکا ہے جس کے باعث ہماری بچے، نوجوان نسل کھیل کود کی سرگرمیوں سے محروم ہوچکے ہیں، انہوں نے بتایا کہ گراؤنڈ پر قبضہ مافیا نے بھی ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں، گراؤنڈ کے 40 فیصد حصہ پر قبضہ ہوچکا ہے اور اب جو حصہ رہتا ہے اس پر بھی قبضہ مافیا نے نظریں گاڑی ہوئی ہیں، ان کا کہنا تھا کہ انتخابات کے دوران بلدیاتی نمائندوں نے علاقائی مسائل کے حل کیلئے بلند و بانگ دعوے کیے تھے لیکن جیسے ہی کامیابی ملی تو وہ علاقے کے مسائل کو بھول کر وزراء کی خوشامد میں مصروف ہوگئے ہے اور عوامی مسائل حل کرنے کے بجائے صرف اور صرف ذاتی مفادات حاصل کر رہے ہیں، جس کے باعث علاقہ مکینوں کے مسائل میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے، انہوں نے کمشنر سکھر، ڈپٹی کمشنر و دیگر حکام سے مطالبہ کیا کہ نیویارڈ روہڑی میں قائم ناز گراؤنڈ کی حالت زار کا نوٹس لیکر گندے پانی کے جوہڑوں کے خاتمے، صفائی ستھرائی کی صورتحال کو بہتر بنا کر گراؤنڈ کی تزین و آرائش کرائی جائے تاکہ نوجوان نسل کو صحتمندانہ ماحول فراہم کر کے کھیل کود کی سرگرمیاں مہیا ہوسکیں اور نوجوان نسل غیر اخلاقی سرگرمیوں میں ملوث ہونے سے بچ سکیں۔

Read Previous

ڈپٹی کمشنر سکھر 6فروری کو مون سون بارشوں کے انتظامات کے حوالے سے اجلاس کی صدارات کرینگے

Read Next

سکھر:موٹر وے پولیس کا کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی

%d bloggers like this: