• February 24, 2020

دوکانوں کے کرایہ داری کی مدت معاہدہ کم از کم دس سال مقرر کی جائے،خالد چوہدری

اسلام آباد(ہم صفیر نیوز) کوئی بھی کاروبار شروع کرتے ہی کامیاب نہیں ہوتا اس کے لئے کچھ مدت درکار ہے جبکہ مالکان جائیداد دوسال کا کرایہ داری کا معاہدہ کرتے ہیں جوکہ نامناسب ہے۔ قانون کرایہ داری کا ترمیمی بل قومی اسمبلی میں زیر التوا ہے۔ اس مجوزہ بل میں دوکانوں کے کرایہ داری کی مدت معاہدہ کم از کم دس سال مقرر کیا جائے۔ یہ مطالبہ ٹریڈرز ایکشن کمیٹی اسلام آباد کے سیکرٹری اور اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سابق سینئر نائب صدر خالد محمود چوہدری نے فاروقیہ مارکیٹ میں تاجروں کے ایک منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ دوکان کرایہ پر لینے کے ایک سال بعد ہی مالک کرایہ بڑھانے کا تقاضا کرتے ہیں اور نہ بڑھانے کی صورت میں خالی کرنے کی دھمکی دیتے ہیں کوئی بھی کاروبار راتوں رات قائم نہیں ہوتا۔ خالد چوہدری نے مزید کہا کہ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر، قائمہ کمیٹی کے چیئرمین اور رکن قومی اسمبلی راجہ خرم نواز اور سی ڈی اے کے لئے وزیر اعظم کے مشیر علی نواز اعوان نے مشترکہ طور پر قومی اسمبلی میں قانون کرایہ داری کا ترمیمی بل پیش کر رکھا ہے لیکن حکومتی اور اپوزیشن کی چپقلش کی وجہ سے آسانی سے یہ مجوزہ بل پاس ہوتا ہوا نظر نہیں آتا۔ اب تو اسلام آباد میں کرایہ داری کی قانون کا نفاذ تاجروں کے لئے خواب ہی بن کر رہ گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ دن بدن اسلام آباد میں کاروبار کرنا بھی مشکل ہوگیا ہے سی ڈی اے اور ایم سی آئی نے ٹریڈ لائسنس فیس میں کئی ہزار گنا اضافہ کردیا ہے جوکہ سراسر زیادتی ہے۔ سی ڈی اے آرڈیننس میں صرف اشیاء خورد نوش کے لئے ٹریڈ لائسنس بنوانا ضروری ہے لیکن ایم سی آئی نے ہر قسم کے کاروبار کے لئے نوٹس جاری کردیئے ہیں جوکہ غیر قانونی ہے۔ انہوں نے وزیر اعظم کے مشیر برائے سی ڈی اے علی نواز اعوان سے اپیل کی کہ وہ ذاتی طور پر دلچسپی لیتے ہوئے غیر قانونی نوٹس واپس کرائیں۔ 

Read Previous

وزیراعظم نے فوری بلوچستان میں فوڈ ٹیسٹنگ لیبارٹری کے قیام کی ہدایت کی ہے،فردوس عاشق

Read Next

پاکستان کا فخر،پاکستانی خواتین، دنیا میں امن کیلئے پیش پیش

%d bloggers like this: